پیر 23 مئی 2022

حمیمہ ملک :عمران ہاشمی کے ساتھ کام کرکے مزہ آیا،مگر…

ماڈل و اداکارہ حمیمہ ملک نے کہا ہے کہ جب انہوں نے پاکستانی فلموں کے بعد بھارت میں جاکر عمران ہاشمی کے ساتھ فلم میں ’بار ڈانسر‘ کا کردار ادا کیا تو لوگوں نے ان سے نفرت کرنا شروع کی اور انہیں غلط سمجھا جانے لگا۔

حمیمہ ملک حال ہی میں نعمان اعجاز کے شو ’جی سرکار‘ میں شریک ہوئیں، جہاں انہوں نے اپنے شوبز کیریئر سمیت ذاتی زندگی کے واقعات بھی بتائے۔
اداکارہ نے بتایا کہ پاکستان میں ’بول‘ فلم میں کام کرنے کے بعد انہیں شہرت ملی اور مذکورہ فلم میں وہ ’زینب‘ بن کر مریں تو لوگوں نے ان کی اداکاری کو سراہا اور ان پرجان قربان کرنے کو تیار ہوئے۔

ساتھ ہی بتایا کہ لیکن جب وہ کام کرنے بھارت گئیں تو لوگوں نے ان پر ’بول سے بولڈ تک‘ کا ٹیگ لگایا اور انہیں بولڈ اداکارہ کہا جانے لگا۔

حمیمہ ملک نے کہا کہ دراصل وہ شروع سے ہی ’بولڈ‘ رہی ہیں، ایسا نہیں ہے کہ وہ بھارت جانے کے بعد ’بولڈ‘ ہوئیں۔

اداکارہ نے بتایا کہ ابتدائی طور پر بول کے بعد انہیں بولی وڈ اداکار سنجے دت اور وویک اوبرائے کے ہمراہ کام کرنے کا موقع ملا اور اسی دوران ہی وہ اجمیر شریف سمیت بھارت کی دیگر مزاروں پر بھی گئی تھیں۔

حمیمہ ملک نے بتایاکہ بعد ازاں انہیں عمران ہاشمی کے ساتھ ’نٹور لال‘ میں کام کرنے کا موقع ملا اور انہوں نے فلم میں ’بار ڈانسر‘ کا کردار ادا کیا تو لوگوں نے ان پر سخت تنقید کی اور ان سے نفرت کرنے لگے۔

ایک سوال کے جواب میں اداکارہ نے کہا کہ انہیں عمران ہاشمی کے ساتھ کام کرکے بہت مزہ آیا اور وہ اب بھی بہترین دوست ہیں اور ان کا آپس میں رابطہ ہے۔

Facebook Comments