جمعہ 18 ستمبر 2020

ٹائپ رائٹر پر کام کر کے تاریخ اور فلسفے کی ڈگری لینے والا دنیا کا معمر ترین شاگرد

ٹائپ رائٹر پر کام کر کے تاریخ اور فلسفے کی ڈگری لینے والا دنیا کا معمر ترین شاگرد

کمپیوٹریا ٹیبلیٹ کی بجائے ٹائپ رائٹر پر کام کرنے والے چھیانوے سالہ اطالوی گوئی سیپے پیٹرنو نے تاریخ اور فلسفے کی ڈگری حاصل کر کے دنیا کے معمر ترین شاگرد کا اعزاز حاصل کرلیا۔

دوسری جنگِ عظیم کے فوجی، پوتوں اور نواسوں والے سابق ریلوے ورکر نے یونیورسٹی آف پالرمو اٹلی سے96 برس کی عمر میں گریجویشن مکمل کر لی۔

گوئی سیپے پیٹرنو نے اٹلی کی پالرمو یونیورسٹی سے تاریخ اور فلسفے کی ڈگری حاصل کرکے دنیا کے معمر ترین شاگرد ہونے کا اعزاز اپنے نام کیا۔

سسلی میں پیدا ہونے والے گوئی سیپے، پڑھنے لکھنے سے شغف کے باوجود جوانی میں تعلیم حاصل نہ کرسکے لیکن نوے برس کے ہوئے تو سوچا کہ اب پڑھ لینا چاہیے اور پھر 96 برس کی عمر میں بالآ خر گریجویشن کی ڈگری حاصل کرنے میں کامیاب بھی ہو گئے۔