اتوار 20 ستمبر 2020

ذیابطیس کے مریضوں کیلئے کون کون سی چائے مفید ہیں؟

Which teas are useful for diabetics?
ذیابطیس کے مریضوں کیلئےچند مفید چائے:

بلڈ شوگر کی بےقابو سطح ذیابیطس کے مریضوں کو خطرے میں ڈال سکتی ہے، صحت مند غذا قدرتی طور پر بلڈ شوگر کی سطح کو کنٹرول کرنے میں اہم کردار ادا کرتی ہے اور کچھ چائے خون میں شوگر کی سطح کو کنٹرول کرنے میں بھی مددگار ثابت ہوتے ہیں۔

ماہرین کہتے ہیں کہ ذیابیطس کے مریضوں کو مشروبات پینے سے پرہیز کرنا چاہیے اور پھلوں کے جوسز سے بھی پرہیز کرنا چاہیے کیونکہ پھلوں میں قدرتی چینی ہوتی ہے اور جب ہم کسی بھی پھل کا جوس بناتے ہیں تو ہمیں زیادہ پھلوں کی ضرورت ہوتی ہے جس کا مطلب زیادہ چینی ہے۔ لہٰذا مشورہ دیا جاتا ہے کہ پھل کھائیں اور جوس سے پرہیز کریں۔

یہاں کچھ ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر آپ ذیابیطس کے مریض ہیں تو آپ چند مخصوص چائے کو اپنی غذا میں شامل کرسکتے ہیں کیونکہ اِس سے آپ کی بلڈ شوگر کی سطح بھی برقرار رہے گی اور آپ تندرست بھی رہیں گے، آئیے جانتے ہیں کہ کون کونسی چائے ہیں جو ذیابطیس کے مریضوں کے لیے مفید سمجھی جاتی ہیں۔

ذیابطیس کے مریضوں کیلئےچند مفید چائے:

سبز چائے:

سبز چائے وزن میں کمی کے لیے بڑے پیمانے پر استعمال کی جاتی ہے، اس چائے میں اینٹی آکسیڈینٹ اور متعدد خصوصیات موجود ہوتی ہیں جو آپ کی صحت کے لیے مختلف طریقوں سے فائدہ مند ثابت ہوسکتی ہیں اور سبز چائے پینا بلڈ شوگر کی صحت مند سطح کو برقرار رکھنے میں معاون ہے۔

مطالعات کے مطابق، سبز چائے پینے سے ٹائپ ٹو ذیابیطس کے خطرے پر بھی قابو پایا جاسکتا ہے لہٰذا ڈاکٹرز کہتے ہیں کہ ذیابطیس کے مریضوں کو لازمی سبز چائے کو اپنی غذا میں شامل کرنا چاہیے۔

کیمومائل چائے:

کیمومائل چائے مختلف طریقوں سے آپ کی صحت کے لیے مفید ہے۔ مطالعات کے مطابق کیمومائل چائے پینے سے بلڈ شوگر کی سطح کو سنبھالنے میں مدد مل سکتی ہے۔ یہ چائے آپ کی مجموعی صحت کے لیے بھی اچھی ہے۔ یہ آسٹیوپوروسس کے خطرے کو روکنے میں مدد کرسکتی ہے۔ اگر آپ کو نیند آنے میں مشکلات پیش آتی ہیں تو آپ اس صورت میں بھی اس چائے کا استعمال کرسکتے ہیں کیونکہ کیمومائل چائے نیند کو بھی فروغ دیتی ہے۔

ہبسکوس چائے:

ہبسکوس پھول کے خوبصورت سُرخ پتوں سے ہبسکوس چائے کو تیار کیا جاتا ہے اور یہ چائےصحت کے بہت سے فوائد سے بھی بھرپور ہوتی ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق معلوم ہوا ہے کہ ہبسکوس چائے پینے سے خون میں شوگر کی بڑھتی سطح کو کنٹرول کیا جاسکتا ہے۔

اس چائے میں اینٹی آکسیڈینٹ کی خوبیاں پائی جاتی ہیں جو دل کی بیماری کے لیے بھی بہتر ہے اور اس کے علاوہ یہ چائے وزن کم کرنے اور جگر کے مرض کے لیے بھی فائدہ مند ہے جبکہ ہبسکوس چائے بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنے میں بھی مدد کرتی ہے۔

ذیابطیس کے مریضوں کو صحت مند غذا کا استعمال کرنا چاہیے اور باقاعدگی سے ورزش بھی کرنی چاہیے کیونکہ صحت مند اور متوازن غذا ذیابیطس سے لڑنے کے لیے ایک موثر حکمت عملی ہے، اِس کے علاوہ اپنے ڈاکٹر سے مستقل رابطے میں بھی رہنا چاہیے۔