اتوار 29 نومبر 2020

بھارتی پنجاب: 6 سالہ بچی ریپ کے بعد زندہ جلادی گئی، ملزمان گرفتار

بھارتی پنجاب: 6 سالہ بچی ریپ کے بعد زندہ جلادی گئی، ملزمان گرفتار

بھارتی ریاست پنجاب میں 6 سالہ بچی ریپ کے بعد زندہ جلادی گئی، جس کی لاش تحویل میں لے کر پولیس نے مقدمہ درج کرلیا ہے۔

واقعے پر وزیراعلیٰ پنجاب امریندر سنگھ نے گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق ہوشیار پور کے علاقے ٹانڈہ میں ریپ اور قتل کے اس درد ناک واقعے کے مقدمے میں ریپ، قتل اور شواہد مٹانے کی تعزیرات شامل کی گئی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق بچی کی آدھی جلی لاش سرجیت سنگھ  نامی شخص کی حویلی سے ملی، پولیس نے ریپ، قتل اور شواہد مٹانے کی تعزیرات کے تحت سر پریت سنگھ اور اس کے دادا سرجیت سنگھ کو بھی گرفتار کرلیا ہے۔

بچی کے والد جو مزدوری کی خاطر بہار سے ہجرت کرکے پنجاب آئے تھے، نےکہا ہے کہ میں نے سرجیت سنگھ کے خلاف پولیس میں شکایت کی ہے، وہ بدھ کی سہ پہر میری بیٹی کو بسکٹ دلانے کے بہانے لے گئے، جس کے بعد وہ لاپتہ ہوگئی اور اب اس کی لاش ملی ہے۔

پولیس نے ملزمان کو گرفتار کرلیا ہے لیکن اس کے باوجود ڈی جی پولیس نے تفصیلی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔