بدہ 23 ستمبر 2020

رابی پیرزادہ کو مگرمچھ اور سانپ پالنے کے کیس میں بری کردیا گیا

رابی پیرزادہ کو مگرمچھ اور سانپ پالنے کے کیس میں بری کردیا گیا

لاہور: سابق پاکستانی گلوکارہ رابی پیرزادہ کو مگرمچھ اور سانپ پالنے کے کیس میں بری کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سابق پاکستانی گلوکارہ رابی پیرزادہ کو مگرمچھ اور سانپ پالنے کے کیس میں بری کردیا گیا، مقامی عدالت کے جج حارث صدیقی نے بریت کی درخواست پر فیصلہ سنایا۔

درخواست گزار وکیل نے موقف اختیار کیا کہ رابی پیرزادہ کا اس مقدمے سے کوئی تعلق نہیں ہے، وائلڈ لائف نے کارروائی پہلے شروع کی سرچ وارنٹ بعد میں لیے۔

وکیل نے موقف اختیار کیا کہ وائلڈ لائف کا یہ عمل قانون کی خلاف ورزی ہے، وائلڈ لائف نے ذاتی رنجش پر رابی پیرزادہ کو مقدمے میں ملوث کیا، عدالت مقدمے میں رابی پیرزادہ کو بری کرنے کا حکم دے۔

وائلد لائف کا موقف تھا کہ رابی پیرزادہ نے غیرقانونی طور پر خطرناک جانور پال رکھے تھے۔

مقامی عدالت کے جج حارث صدیقی نے وائلد لائف حکام اور درخواست گزار کے وکیل کے موقف سننے کے بعد رابی پیرزادہ کو مگرمچھ اور سانپ پالنے کے کیس میں بری کردیا۔

واضح رہے کہ 26 جنوری کو سابق گلوکارہ رابی پیرزادہ نے زندگی اسلام کے عین اصولوں کے مطابق گزارنے کے اعلان کے بعد عمرے کی سعادت بھی حاصل کرلی تھی۔

یاد رہے کہ گزشتہ سال نومبر میں رابی پیرزادہ نے شوبز انڈسٹری چھوڑنے کے بعد نئے سفر کا آغاز کیا تھا، رابی پیرزادہ نے خانہ کعبہ کی پینٹنگز شیئر کرتے ہوئے لکھا تھا کہ ’’یہ ایک نیا آغاز ہے‘‘۔