ھفتہ 11 جولائی 2020

دوست سے ملنے کے لیے لڑکی کا روپ دھارنا نوجوان کو مہنگا پڑ گیا

سکھر: سندھ کے سکھر میں دوست سے ملنے کے لیے نوجوان کو لڑکی کا روپ دھارنا مہنگا پڑ گیا۔

 دھرتی نیوز کی رپورٹ کے مطابق سکھر میں خواتین کے کپڑے پہن کر اسپتال جانے والے نوجوان کو دھر لیا گیا، مذکورہ نوجوان اپنے دوست سے ملنے کے لیے لڑکی کا روپ دھار کر اسپتال پہنچا تھا۔

نوجوان کو خواتین کا روپ دھارے دیکھ کراسپتال انتظامیہ حرکت میں آئی اور پولیس کو طلب کیا جس کے بعد پولیس نے اسپتال جانے والے نوجوان کو گرفتار کرلیا۔

واضح رہے کہ 8 مارچ کو اسلام آباد میں عورت مارچ میں برقع پہننے پر شریک ہونے والے نوجوان کو گرفتار کرلیا گیا تھا۔

گرفتار شخص کا نام عثمان تھا جس کا کہنا تھا کہ فاٹا کی خواتین یہاں نہیں آسکتیں اس لیے میں ان کی نمائندگی کر رہا تھا۔ گرفتار کے بعد کوہسار پولیس نے نوجوان کو تھانے منتقل کردیا تھا۔

اسلام آباد میں بھی عورت آزادی مارچ کا اہتمام کیا گیا۔ نیشنل پریس کلب کے سامنے مارچ کے شرکا پر بعض افراد کی جانب سے پتھراؤ کا واقعہ بھی پیش آیا۔ حالات پر قابو پانے کے لیے پولیس کی اضافی نفری موقع پر پہنچ گئی۔ شرکا نے نیشنل پریس کلب سے ڈی چوک تک مارچ کیا تھا۔