بدہ 23 ستمبر 2020

3 ارب ڈالر کے بدلے کورونا وائرس سے نجات پاؤ، خاتون کا دعویٰ

3 ارب ڈالر کے بدلے کورونا وائرس سے نجات پاؤ، خاتون کا دعویٰ

کویت سٹی : کویتی خاتون نے ہلاکت خیز کورونا وائرس کا موثر علاج بتانے کے بدلے 5 کھرب کا مطالبہ کردیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق یہ کوئی معمولی خاتون نہیں بلکہ کویت کی سوشل میڈیا اسٹار سلوی المطیری ہیں جو پیشے ایک تاجر بھی ہیں، سلوی المطیری نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر ایک ویڈیو کلپ شیئر کیا جس میں ان کا کہنا تھا کہ ‘میرے پاس کورونا وائرس کا موثر علاج ہے’۔

کویتی خاتون نے ویڈیو میں دعویٰ کیا کہ وہ مہلک ترین کورونا وائرس کا موثر علاج فراہم کرسکتی ہیں لیکن اس کے بدلے مجھے 1 ارب کویتی دینار ( تقریباً 500 ارب روپے ) ادا کرنے ہوں گے۔

عيد الشمري@hadreen350

هذا دواكم وعلى الله شفاكم عطوها مليار دينار كويتي وأبشروا بالعافية يا الصينيين سلوى المطيري أثق بكلامها وراح تثبت لكم الأيام صحة ما تقول

Embedded video
46 people are talking about this

سلوی المطیری نے ویڈیو کے دوران واضح کیا کہ مجھے پیسوں کی کوئی کمی نہیں، میرے مالی حالات بہت اچھے اور میں پیشے کے لحاظ سے تاجر ہوں اسی لیے کسی بھی کام میں کسی کے تعاون کی ضرورت نہیں پڑتی۔

خلیجی ملک کویت سے تعلق رکھنے والی خاتون نے وڈیو کلپ میں اپنے مالی حالات بتانے باوجود واضح کردیا کہ وہ کورونا وائرس کا علاج کم از کم 1 ارب دینار میں دے سکیں گی۔

انہوں نے وڈیو میں یہ نہیں بتایا کہ دنیا کا کونسا ادارہ انہیں اتنی بڑی رقم پیش کرے گا۔

خیال رہے کہ کرونا وائرس (COVID-19) کی ہلاکت خیزی جاری ہے، وائرس سے چین کے اندر مجموعی ہلاکتوں کی تعداد 14 سو سے بھی بڑھ گئی، جب کہ کرونا وائرس کے مزید 14886 نئے کیسز رپورٹ ہو گئے ہیں، وائرس سے متاثر ہونے والے افراد کی تعداد 65 ہزار تک پہنچ گئی ہے۔

جاپانی بندرگاہ پر کھڑے کروز شپ میں وائرس متاثرین کی تعداد 174 ہو گئی ہے، یہ کروز شپ ایک ہفتے سے قرنطینہ میں ہے، جس میں تین ہزار افراد موجود ہیں۔ دوسری جانب دنیا بھر میں کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے، 27 ممالک میں 250 سے زیادہ کیسز رپورٹ ہو چکے ہیں، جاپان میں 90، سنگاپور میں 40، جنوبی کوریا میں 25، بھارت میں 3 اور فرانس میں 4 شہری کرونا وائرس سے متاثر ہوئے۔

خیال رہے کہ ہلاکت خیز کرونا وائرس چین کے انڈسٹریل شہر ووہان سے پھیلا ہے جس نے پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے، یہ وائرس سانس کے نظام میں شدید انفیکشن کا باعث بنتا ہے، اس کی علامات میں بخار اور خشک کھانسی شامل ہیں۔