جمعرات 21 اکتوبر 2021

کرپشن کی شکایات، ڈی آئی جی ٹریفک پنجاب نے 2 ڈی ایس پیز سمیت 18 اہلکاروں کو معطل کردیا

لاہور(دھرتی نیوز)ڈی آئی جی ٹریفک پنجاب سہیل اختر سکھیرا نے عوامی شکایات اور خفیہ انکوائری میں کرپشن ثابت ہونے پر ایکشن لیتے ہوئے دو ڈی ایس پیز 18 اہلکاروں کو معطل کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کرپشن ثابت ہونے پر دو ڈی ایس پیز سمیت 16 سب انسپکٹرز ، ہیڈ کانسٹیبلز ، کانسٹیبلز اور وارڈنز کو ٹریفک ہیڈ کوارٹر کلوز کر دیا گیا ہے ۔ معطل ہونے والوں میں ڈسٹرکٹ ٹریفک آفیسر بہاولنگر ڈی ایس پی حسن دانیال،ڈسٹرکٹ ٹریفک آفیسر ڈی جی خان عمران رشید، انچارج لائسنس برانچ سٹی ٹریفک پولیس ملتان مہیر اخلاق احمد ،انچارج لائسنس برانچ بہاولنگر محمد اجمل، ٹریفک وارڈن ملتان تجمل احمد اور ٹریفک وارڈن بہاولنگر وسیم طاہر شامل ہیں۔ ایس ایس پی ٹریفک ہیڈ کواٹرز ڈاکٹر بشریٰ کو معطل کیے گئے افسران کے خلاف باضابطہ انکوائری کا حکم بھی جاری کردیا گیا ہے۔ڈی آئی جی ٹریفک پنجاب سہیل سکھیرا کا کہنا تھا کہ کرپشن کے خاتمے اور شہریوں کیلئے لائسنسنگ کا اجراء آسان بنانے کیلئے ویجی لینس ٹیمیں مختلف اضلاع کی لائسنسنگ برانچوں میں اچانک انسپکشنز جاری رکھیں ۔آئی جی پنجاب راؤ سردار کے ویژن کے مطابق ٹریفک پولیس سے کرپشن کا خاتمہ اور لائسنس اجراء کے عمل کو مکمل شفاف اور آسان بنانا اولین ترجیح ہے ۔

Facebook Comments